باہمت خواتین اور جرات مند خاتون پولیس افسر

میاں نعیم ارشد

پاکستان سمیت دنیا بھر میں وہی خواتین کامیاب رہتی ہیں جو عملی طور پر خود کو اہل کرتی ہیں۔ گزشتہ دنوں8مارچ کو خواتین کا عالمی دن منایا گیا، اس دن کے منانے کا مقصد خواتین کو حقوق دلانے کیلئے ان کیلئے آواز بلند کرنا ہوتا ہے۔ خواتین کا عالمی دن پاکستان میں بھی منایاجاتا ہے ، گو کہ یہاں پر صرف ریلیوں سیمینار تک محدود ہوتا ہے، پھر بھی چند اہم شخصیات خواتین کے حقوق کیلئے سالہا سال سرگرم عمل رہتے ہیں ۔ آج کل پاکستان میں اے ایس پی شہر بانو نقوی کے بہت چرچے ہیں۔ وجہ یہ ہے کہ اس خاتون پولیس افسر نے جو کمال کی جرات مندی دکھائی وہ شائد کوئی مرد پولیس افسر نہ دکھا سکتا۔ ایک خاتون نے عربی لباس پہن رکھا تھا جس پر عربی زبان میں کچھ لکھا تھا، جس پر لاہور کے چند عوام نے اس خاتون کو یرغمال بنا لیا۔ خبر میڈیا سے خاتون پولیس افسر تک پہنچی تو شہر بانو نقوی نے عوام کے جم غفیر سے اس یرغمالی خاتون کو ایسے نکال لائی جیسے کوئی مگر مچھ کے منہ سے کسی شخص کو نکال لاتا ہے ۔ واقعی اے ایس پی لاہور شہر با نو نقوی نے قابل فخر کارنامہ سرانجام دیا ہے جو کہ پاکستانی معاشرے سمیت دنیا بھر کیلئے ایک مثال بن گئی ہے۔ اگر ہم ماضی کے جھروکوں کی طرف دیکھیں تو مادر ملت محترمہ فاطمہ جناح کا قائداعظم کے ساتھ سیاسی کردار بے مثال ہے، مگر کچھ نادیدہ قوتوں نے فاطمہ جناح کو بھی سیاست سے آئوٹ کردیا ۔ بے نظیر بھٹو اسلامی ممالک کی تاریخ میں پہلی خاتون وزیراعظم بنیں ، ڈاکٹر فہمیدہ مرزا نے پہلی سپیکر قومی اسمبلی بن کر نئی سیاسی تاریخ رقم کی ہے ۔ مریم نواز شریف پہلی خاتون وزیراعلی پنجاب ہیں جن سے بہتر امیدیں وابستہ کی جاسکتی ہیں ۔ ملتان کی کمشنر مریم خان بھی خاتون کمشنر ہونے کے ناطے بہتر کام کررہی ہیں ، مریم خان سے ملتان ڈویژن کی بہترین انداز سے تعمیروترقی کی امیدیں وابستہ کی جاسکتی ہیں۔ ارفع کریم کانام سافت وئیر کی دنیا میں ہمیشہ بلند مقام پر قائم رہے گا۔ کم سن ارفع کریم نے جس طرح پاکستان کا نام روشن کیا ہے وہ تاریخ رہے گا ۔ ڈاکٹر عافیہ صدیقی جو کہ امریکہ میں قید ہیں طالبان دور میں امریکہ نے ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو طالبان سے تعاون کرنے کے شبہ میں گرفتار کرکے سزا دے رکھی ہے ۔ اس کیلئے ہر سطح پرآواز بلند کرنے کی اشد ضرورت ہے ۔تعلیمی بورڈ ملتان کی سابق چیئرپرسن و ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسر ایلمنٹری زنانہ ملتان ڈاکٹر شمیم اختر سیال بھی تعلیمی میدان میں بہترین کام کر رہی ہیں ، مگر کچھ عناصر نے اپنے ذاتی مفادات کے تحت ڈاکٹر شمیم اختر کیخلاف پروپیگنڈا مہم چلائی جو کہ وہ ناکام رہی مگر ڈاکٹر شمیم اختر سیال ثابت قدم رہیں اور سرخرو ہوئیں ۔ واقعی ملکی ترقی میں خواتین نے ہمیشہ مثالی کارنامے سرانجام دئیے ہیں ۔ پوری قوم انہی خواتین کو سلام پیش کرتی ہے۔ ملتان میں مزید جن خواتین نے علمی، ادبی سیاسی سماجی ودیگر شعبوں میں کامیابی کے جھنڈے گاڑے ہیں ، ان میں لاہورہائیکورٹ کی تاریخ میں پہلی خاتون چیف جسٹس محترمہ فخر النسا کھوکھر ، پہلی باپردہ کمرشل پائلٹ شہناز لغاری، ریڈیو پاکستان ملتان کی پہلی خاتون قاریہ نسرین اختر مثالی ، خاتون کاشتکار بیگم شمشاد نور اللہ ، پاکستان ٹیلی ویژن ملتان سنٹر کی پہلی جنرل منیجر راحت بانو، ریڈیو پاکستان ملتان کی پہلی خاتون سٹیشن ڈائریکٹر کوثر ثمرین ، پاکستان کی نامور کلاسیکل سنگر میڈم ثریا ملتانیکر ، سابق ڈائریکٹر محکمہ سوشل ویلفیئر اینڈ بیت المال پنجاب ملتان مسز نسرین اختر جعفری کی شاندار خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ۔ بیگم فرخ مختار بیگم نسیم چوہدری، ثمر بانو ہاشمی، عصمہ زبیر، بیگم اقبال فیضان، ریحانہ بوٹا ،شامی سلطان،نگہت رفیع ایڈووکیٹ، نرگس نشاط صدیقی، بیگم شبنم رانا،عذرا شہزاد اعوان، بیگم زبیدہ جعفری، نوشابہ نرگس، ماہر تعلیم عصمت عظیم، ڈاکٹر غزالہ خاکوانی، ڈاکٹرماہ طلعت زیدی، بیگم نسیم ملک، سماجی سائسنس دان حمیرا ہاشمی ، ریحانہ ہاشمی، وائس چانسلر ویمن یونیورسٹی ملتان پروفیسر ڈاکٹر کلثوم پراچہ، وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی ملتان پروفیسر ڈاکٹر مہناز خاکوانی، سابق وائس چانسلر صادق ویمن یونیورسٹی بہاولپور پروفیسر ڈاکٹر صاعقہ امتیاز آصف، پروفیسر ڈاکٹر عذرا اصغر علی، پروفیسر ڈاکٹر جویرہ عباس، پروفیسر ڈاکٹر آسیہ ذوالفقار، پروفیسر ڈاکٹر فرزانہ کوکب نے بھی بہترین انداز سے اپنی صلاحیتیوں کے جوہر دکھائے ہیں۔ خواتین ہمارے معاشرے کا اہم حصہ ہیں ماں، بیٹی بہن اور بیوی عورت کے مختلف روپ ہیں جو ہمارے لئے قابل احترام ہیں ۔ملتان سے تعلق رکھنے والی بے شمار خواتین آج بھی زندگی کے مختلف شعبوں میں اپنی بھرپور صلاحیتوں کی بدولت ملک وقوم کا نام روشن کررہی ہیں۔ ان میں ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر سکینڈری ملتان ڈاکٹر عالیہ نکہت، ایس پی روبینہ عباس، زہراہ سجاد زیدی ایڈووکیٹ، خاتون سماجی رہنما و صدر انجمن تجارت پیشہ ور خواتین ملتان طاہرہ نجم، نامور مصورہ فرح رحمان، ماہر نفسیات وسماجیات ڈاکٹر سبحان سروری، چیف پوسٹ ماسٹر ملتان فائزہ خالد راو، ای این ٹی سپیشلسٹ نشتر ہسپتال ملتان ڈاکٹر شہلا مجید، سابق سینیئر نائب صدر ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن ملتان رابعہ منال خان ایڈووکیٹ، سینیئر پروڈیوسر ریڈیو پاکستان ملتان رضوانہ تبسم درانی، صدر پاکستان پیپلز پارٹی ملتان شہرعابدہ بخاری، خاتون سماجی رہنما شائستہ بخاری، بشری نقوی ایڈووکیٹ ، شاعرہ نصرت، رضوانہ شاہین اعوان، سابق ممبر ضلع کونسل بسم اللہ ارم، ڈپٹی ڈائریکٹر ویمن یونیورسٹی ملتان سعدیہ طالب، سابقہ کونسلر عاصمہ اسحاق بلوچ،یاسمین خاکوانی ، قربان فاطمہ، شازیہ بتول، سابق پرنسپل گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج ملتان پروفیسر سنجیدہ ساجد، سابق ایم پی اے وسابق ترجمان حکومت پنجاب سبین گل خان،زاہدہ حمید قریشی چیئرپرسن سوسائٹی فار سپیشل پرسن ملتان،سابق ایم پی اے شمیم اختر، سابق ایم این اے میمونہ جاوید ہاشمی، ثمینہ ارم سرلہ، سابق ایم این اے بیگم نسیم چوہدری، سابق ایم این اے سلطانہ شاہین، سابق ایم پی اے خولہ امجد، سابق ایم پی اے شاہین شفیق ، سابق صوبائی وزیر سوشل ویلفیئر پنجاب نغمہ مشتاق لانگ ،ایم پی اے مقصودہ انصاری، مہر بانو قریشی، بیگم چوہدری عبدالوحید آرائیں، شازیہ عباس کھاکھی، زہرہ بتول گردیزی، سابق ایم پی اے زیب النسا قریشی ایڈووکیٹ ، ظل فاطمہ زیدی ایڈووکیٹ، آصفہ سلیم، عالیہ افضل سپرا، رفعت اعظم چوہدری، شہناز ذوالفقار چوہدری، عفت سعید اللہ خان، ساجدہ خلیل، پرنسپل ریٹائرڈ گورنمنٹ مون لائٹ گرلز ہائی سکول ملتان خالدہ ظفر، جسمین فرخ عمر، مصباح شاہین، کمپیئر اور سنگرشمیم انصاری،سابق پرنسپل گورنمنٹ مسلم گرلز ہائی سکول ملتان آسیہ چوہدری،ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسر کبیروالا سلطانہ اسلم رانا، سابق ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسر ملتان نصرت فردوس چوہدری، شبانہ منیر ، ماہ طلعت منور صدیقی، نزہت پر وین، اے ای او ہیڈ کوارٹر ملتان سٹی عروسہ، اے ای او ہیڈ کوارٹر تحصیل صدر ملتان سابق پرنسپل گورنمنٹ گرلز ہائی سکول سینٹرل جیل ملتان ساجدہ بانو،ایڈیشنل ڈائریکٹر ایلیمنٹری فنانس تسنیم کوثر، ایڈیشنل ڈائریکٹر ایلیمنٹری سکولز ایڈمن سعدیہ احمر ہاشمی،سعدیہ کرمانی بھی شامل ہیں ۔ جبکہ صائمہ علی، پی ایچ ڈی سکالر ڈپٹی ڈی ای او زنانہ ملتان سٹی مسز رخسانہ ، ڈاکٹر عذرا شوذب کاظمی، صائمہ عامر خان، پرنسپل گورنمنٹ گرلز ہائی سکول شجاع اباد عائشہ حبیب، غزل غازی، عائشہ غازی، حمیرا طارق شیخ،سابق پرنسپل گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج شاہ رکن عالم کالونی ملتان و سابق ممبر سنڈیکیٹ بہاء دین زکریا یونیورسٹی ملتان پروفیسر فرخندہ ممتاز خان، چیئر پرسن المصطفی ویلفیئر ٹرسٹ رضوانہ عبدالرزاق ساجد، عنبرین بلوچ، مسز نعیم ترین، رخسانہ انور ، بیگم نذیراں اقبال، نسیم جارج، تانیہ عابدی، خاتون کھلاڑی سکھاں فیض، ایس ایس پی پٹرولنگ پولیس ہما نصیب ، پرنسپل گورنمنٹ گرلز ہائی سکول دولت گیٹ ملتان ثمینہ ظفر ،معروف فوک سنگر صوبیا ملک اور خاتون سیاسی اور سماجی رہنما اپا نسرین اختر کی مثالی خدمات کو بھی سنہرے الفاظ میں یاد رکھا جائے گا۔ واقعی خواتین نے ملک وقوم کی ترقی و خوشحالی کیلئے بھی قابل تحسین صلاحیتیوں کا اظہار کیا ہے جنہیں قوم سلام پیش کرتی ہے۔