ملتان (صفدربخاری سے) جامپور میں سرکاری خبر رساں نیوز ایجنسی کے نمائندہ کے دفتر پر4 مسلح افراد کا صحافیوں پرحملہ، عوامی رش کیوجہ سے ملزمان موقع سے فرار اور صحافی محفوظ رہے۔ ضلع بھر کی صحافی برادری کا حکام سے کاروائی کا مطالبہ۔ تفصیل کیمطابق مورخہ 2 جولائی بوقت 7بجے سرکاری خبر رساں نیوز ایجنسی کے ڈسٹرکٹ نمائندہ معروف سینئر صحافی ملک آصف حبیب جکھڑ کے آفس ٹریفک چوک المنصور مارکیٹ میں صحافیوں کی میٹنگ جاری تھی جسمیں ڈسٹرکٹ صدر پریس کلب راجنپور سردار منصور احمد سنجرانی، میاں صفدر، لیاقت علی اور دیگر افراد کی کثیر تعداد موجود تھی جبکہ مارکیٹ میں عوامی رش تھا کہ اچانک 4افراد توقیر عباس راں مسلحہ پسٹل، عباس عرف گڈو مسلح لوہے کا راڈ، زین عباس اور ایک شخص نامعلوم جوکہ مسلح سوٹے تھے، سامنے آکر للکارا کہ آج ہم جان سے ماردیں گے، آفس میں موجود افراد اور مارکیٹ میں عوامی رش کیوجہ سے چاروں ملزمان موقع سے فرار ہوگئے، فوری طور پہ 15 پہ اطلاع دی گئی پولیس نے جائے وقوعہ کا معائینہ کیا جبکہ پولیس تھانہ سٹی جامپور میں واقعہ کی کاروائی کیلئے درخواست دی گئی، اور واقعہ کے مقدمہ کے اندراج اور ملزمان کیخلاف کاروائی کیلئے 1787 پہ بھی شکایت درج کرائی گئی ہے۔ ضلع بھر کے صحافیوں اور سول سوسائٹی کے نمائندوں نے دن دیہاڑے پبلک پلیس مارکیٹ میں واقع صحافتی دفتر پہ حملہ اور جان سے مارنے کی کوشش کی کھلی دہشت گردی پر وزیر اعلیٰ پنجاب، آئی جی پنجاب، آر پی او ڈی جی خان اور ڈی پی او راجنپور سے فوری نوٹس لیکر ملزمان کیخلاف سخت کارروائی اور صحافیوں کو جانی تحفظ کا مطالبہ کیاہے۔