ملتان : صدر کنزیومر رائٹس فورم/ہیلپرزبزنس فورم ملک قسورعںاس گرا ایڈوکیٹ ، لیگل ایڈوائزرز عمران چوہدری ایڈووکیٹ ، ملک اویس نانڈلہ ایڈووکیٹ ، چیف کوآرڈینیٹر غضنفرملک ، نائب صدرخواجہ دلشاد احمد اور جنرل سیکرٹری کلب عابد خان نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا بجلی کے بلوں کا ظالمانہ ٹیرف سسٹم اور اوور بلنگ سے سفید پوش طبقہ اور عام شہریوں کا نظام زندگی درہم برہم ہوکر رہ گیا ہے اشرافیہ کی مراعات اور مفت بجلی جیسی سہولیات کو محدود کرکے عوام کو ریلیف دینے کی بجائے صارف شہریوں پر عرصہ حیات تنگ کردیا گیا ہے مہنگی ترین بجلی کے باعث ملکی انڈسٹری بڑے پیمانے پر بند ہوچکی ہے حکمران 300 یونٹ تک مفت بجلی دینے کا لولی پاپ دے کر اقتدار حاصل ہوتے ہی بے حس ہوچکے ہیں معاشی بدحالی اور بےروزگاری کا اژدھا قوم کو نگل جانا چاہتا ہے سول سوسائٹی اور تاجر برادری حکومت سے مطالبہ کرتی ہے ہنگامی بنیادوں پر حکومتی اللوں تللوں کو محدود اور آئی ایم ایف کی عوام کش معاشی پالیسیاں ترک کی جائیں ورنہ مظلوم شہریوں کی آہوں اور بد دعاؤں کا سونامی سب کچھ درہم برہم کردے گا اس سلسلہ میں چیف جسٹس سپریم کورٹ پاکستان سے اپیل کرتے ہیں خدارا ازخود نوٹس لیں اور عوام کو بےموت مرنے سے بچائیں۔