ملتان: کیتھولک کمیشن برائے بین المذاہب و بین الکلیسائی مکالمہ پاکستان کے چیئرمین بشپ یوسف سوہن کا سکھوں کے تاریخی گوردوارہ پنجہ صاحب حسن ابدال کا دورہ ہیڈ گرنتھی سے ملاقات کر کے بین المذاہب ہم آہنگی کا پیغام دیتے ہوئے کہا ہے کہ معاشرے میں پائیدار امن کے قیام کے لئے تمام مذاہب کے افراد کو مل جل کر کوششیں کرنے کی ضرورت ہے پاکستان میں بسنے والے تمام مذاہب کے علماءکرام سماجی اور مذہبی ہم آہنگی کے لئے بھرپور جدوجہد کر رہے ہیں پر امن افراد کے تعاون سے ہم عیدین ،کرسمس دیوالی ،مل کرمناتے ہیں اورایک دوسرے کی خوشیوں میں شامل ہو کر خوشیوں کو دوبالا کرتے ہیں یہی وہ درس ہے جو کہ ہمیں آسمانی مقدس کتابوں میں ملتا ہے اب وقت آ گیا ہے کہ ہم شدت پسندی سے باہر آکر امن پسندی کی طرف آئیں اور اپنے ملک کو امن کا گہوارہ بنائیں اس موقع پر ریونڈ فادر ڈینیئل تاج ملتان ڈائیوس ،ریونڈ فادرشہزاد کھوکھر حیدر آباد ڈائیوس ،ریونڈ فادر اعظم صدیق اسلام آباد ڈائیوس ،سیموئیل کلیمنٹ نیشنل ایگزیکٹیو سیکریٹری ،کاشف گل کوآرڈینیٹر ،سابق ایم پی روی کمار ،سردار سنتوک سنگھ ،سردار کلیان سنگھ ،سردار بابا جی گوپال سنگھ ،سردار اندرجیت سنگھ ،سردارکلبیر سنگھ ،سردار گلچرن سنگھ ،سردارسرونت سنگھ ،عصمت اللہ خان سمیت دیگر نے شرکت کی اس موقع پر مقررین نے کہا ہے کہ اب وقت آ گیا ہے کہ پاکستان میں بسنے والے تمام مذاہب مسلم مسیح ،ہندو اور سکھوں کو متحد ہونا پڑے گا تاکہ اپنے ملک کو امن کا گہوارہ بنانے کے لئے ہم سب ملک جدوجہد کریں۔