ملتان (صفدربخاری سے) حکومت قومی بجٹ میں مزدوروں اور سرکاری ملازمین کی تنخواہوں ،اور پنشن میں مہنگائی کے مطابق 200 گنا اضافہ کرے تعلیم ،، صحت الاؤنسز میں اضافہ کرے یہ مطالبہ عوامی احتساب سیل و نیشنل لیبر الائنس کے مرکزی چیئرمین غازی احمد حسن کھو کھر نے متوقع قومی بجٹ کے حوالےسے کیا غازی احمد حسن كھوكھر نے کہا آمدہ بجٹ امراء آور با اثر لوگوں کی ضروریات کی بجائے غریبوں مزدوروں ،کسانوں اور چھوٹے سرکاری ملازمین کی ضروریات زندگی کی اشیاء کی نصف کر دی جائیں بجلی گیس پٹرول کی قیمتوں میں کمی جاے زراعت ، تعلیم ،صحت، کے بجٹ میں اضافہ کیا نوجوانوں ،بے روزگاروں کو شناختی کارڈ پر بلاسود قابلِ واپسی 25 لاکھ تک قرضہ دیا جائے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کو قابل واپسی قرض حسنہ قرار دیا جائے تاکہ اس میں وسیع پیمانے پر ہونے والی بے قاعدگیاں روکی جا سکیں سرکاری طور پر رہائشی کالونیاں تحصیل ،،ضلع ،، ڈویژن ،، صوبائی اورمرکز کی سطح پر تعمیر کرنے کیلئے بجٹ رکھا جائے اور بے گھر افراد کو آسان شرائط پر دیئے جائیں ریلوے ، پی آئی اے ،، اسٹیل ملز سمیت اداروں کی نجکاری کی بجائے اصلاح کر کے منافع بخش بنایا جائے اور لوگوں کو روزگار کے مواقع فراہم کیئے جائیں عوام پر ٹیکس ختم کیئے