ممبئی: بالی ووڈ کی معروف اداکارہ ودیا بالن نے انکشاف کیا ہے کہ اُنہیں اپنی کامیاب فلم ‘دی ڈرٹی پکچر’ میں اداکاری کے بعد سگریٹ نوشی کی لت لگ گئی تھی۔بھارتی میڈیا کے مطابق ودیا بالن نے اپنے حالیہ انٹرویو میں اپنی سُپر ہٹ فلم ‘دی ڈرٹی پکچر’ میں کام کرنے کے تجربے پر نظرثانی کی، اس فلم میں اُنہوں نے 1980 کی دہائی کی بھارتی اداکارہ سلک اسمتھا کا کردار ادا کیا تھا۔ودیا بالن نے کہا کہ فلم میں مجھے تمباکو نوشی کرنی تھی اور مجھے ایسا لگتا ہے کہ ہم فلم میں تمباکو نوشی کو جعلی نہیں بنا سکتے لہٰذا میں نے شوٹنگ سے پہلے سگریٹ نوشی کرنا شروع کردی تھی۔اداکارہ نے کہا کہ میں سگریٹ نوشی کرنا جانتی تھی لیکن میں نے کبھی سگریٹ پی نہیں تھی تو مجھے اس فلم میں اپنے کردار کے لیے خصوصی طور پر سگریٹ نوشی کرنی پڑی۔اُنہوں نے کہا کہ فلم ‘دی ڈرٹی پکچر’ کی ریلیز کے بعد مجھے سگریٹ نوشی کی لت لگ گئی تھی، میں ایک دن میں دو سے تین سگریٹ پیتی تھی۔میزبان نے ودیا بالن سے پوچھا کہ کیا وہ اب بھی سگریٹ پیتی ہیں؟ جس پر اداکارہ نے جواب دیا کہ میں اب سگریٹ نوشی نہیں کرتی لیکن مجھے سگریٹ پینا اچھا لگتا ہے۔اداکارہ نے کہا کہ اگر کوئی مجھے یہ کہہ دے کہ سگریٹ آپ کو کوئی نقصان نہیں پہنچاتی تو میں دوبارہ سگریٹ نوشی شروع کردوں گی، میں اپنے کالج کے دنوں میں بھی بس اسٹاپ پر سگریٹ پینے والوں کے پاس کھڑی ہوتی تھی۔ودیا بالن نے مزید کہا کہ میرے لیے فلم ‘دی ڈرٹی پکچر’ میں بولڈ لباس پہن کر ڈانس کرنا اور پھر بولڈ سین کرنا بہت مشکل تھا کیونکہ میں اس فلم سے قبل کبھی ایسا کردار کرنے کا سوچ بھی نہیں سکتی تھی۔