میر پور خاص: پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے دعویٰ کیا ہے کہ نواز شریف نے دھاندلی کے لیے نگراں حکومت کے عہدیداران سے فارم 45 اور فارم 47 رائیونڈ بھیجنے کا مطالبہ کیا ہے، سہولت کار سُن لیں اگر چوتھی بار اس کو وزیراعظم بنایا گیا تو دھاندلی برداشت نہیں کریں گے۔ میرپور خاص میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ ’میں پاکستان کے عوام سے ووٹ مانگ رہا ہوں جبکہ دوسرے سیاست دان ادھر اُدھر دیکھ رہے ہیں، میں نے خیبرپختونخوا، پنجاب اور جنوبی پنجاب کے دورے کیے، یہ سارے علاقے ن لیگ کے ہاتھ سے نکل چکے ہیں اس لیے اب سارا ٹبر لاہور میں اپنا گھر بچانے کی کوشش کررہا ہے۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ باقی سیاسی جماعتیں ذاتی انتقام لے رہی ہیں، جو میاں صاحب اپنے آپ کو چوتھی بار مسلط کرنا چارہا ہے اُس کو وفاق، عوام اور جمہوریت کی نہیں بس اپنی کرسی کی فکر ہے۔ بلاول کا کہنا تھا کہ پاکستان کی باقی تمام سیاسی جماعتیں نام نہاد ہیں، کوئی مذہب، کوئی فرقہ واریت اور کوئی لسانیت کے نام پر تقسیم کرنا چاہتا ہے، ہم ان سب کو عوام کی حمایت سے 8 فروری کو جواب دیں گے، سندھ اور پورا پاکستان ان کی نفرت اور تقسیم کی سیاست کو مسترد کردے گا اور 8 فروری کو تیروں کی بارش ہوگی۔ اُن کا کہنا تھا کہ ’میں نے میاں صاحب کو مباحثے کی پیش کش کی، مگر وہ خوفزدہ ہیں، یہ جو چوتھی بار وزیر بننے جارہا ہے یہ بزدل اور ڈرپوک ہے اور میرے ساتھ بات کرنے کو تیار نہیں، یہ شخص عوام سے خوفزدہ اور ڈرا ہوا ہے اور مطالبہ کررہا ہے کہ ویسے ہی دھاندلی کی جائے جیسے خانصاحب کیلیے 2018 میں انتظامات کیے گئے ہیں۔ پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ ’وہ (ن لیگ والے) جانتے ہیں کے پی، جنوبی پنجاب اُن کے ہاتھ سے نکل گیا، اب انہیں اپنا ہوم گراؤنڈ بھی جانے کا خوف ہے، تین بار وزیراعظم رہنے کے باوجود وہ سندھ میں ایک جلسہ نہیں کرسکے۔ بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ’نواز شریف اب نگراں حکومت کے لوگوں کو استعمال کررہے ہیں اور انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ رائیونڈ میں فارم 45 اور فارم 47 پہنچائے جائیں تاکہ وہ پہلے سے دھاندلی کرسکیں، وہ ابھی سے ووٹوں پر ڈاکا مارنے کیلیے سازشیں کررے ہیں، عوام ایسے بزدل گیدڑ کا ساتھ نہیں دیں گے۔