کراچی :   بلاول بھٹو زرداری نےکہا ہے  کہ مخلوط حکومت بنی تو پی ٹی آئی یا مسلم لیگ (ن) میں سے کسی کا ساتھ نہیں دیں گے۔ بلاول بھٹو نے غیر ملکی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ نوازشریف کے کردار سے سخت مایوس ہوں، پی ڈی ایم کے کردار سے تو پہلے ہی مایوس تھا۔ نوازشریف نے اپنی پرانی سیاسی روش برقرار رکھی تو ان کا ساتھ نہیں دوں گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم لیول پلیئنگ فیلڈ چاہتے تھے مگر یہ مسئلہ تاحال موجود ہے۔ عمران خان اور نوازشریف پرانی سیاست ہی کرنا چاہتے ہیں جو بار بار ناکام ہو چکی، یہ لوگ اپنی انا کی وجہ سے جمہوریت و ریاست کو نقصان پہنچاتے ہں۔ بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ آزاد امیدواروں میں پی ٹی آئی امیدواران کی اکثریت والی بات درست نہیں، پنجاب میں کئی امیدوار مسلم لیگ (ن) کے مخالف اور آزاد ہیں، ان میں سے بہت سے آزاد امیدوار پہلے پی ٹی آئی یا (ن) لیگ کے ساتھ تھے۔ انتخابات کے بعد ہو سکتا ہے آزاد امیدوار پیپلز پارٹی کے ساتھ آ ملیں۔ واضح رہے کہ بلاول بھٹو زرداری نگران حکومت سے قبل سیاسی جماعتوں کے اتحاد پی ڈی ایم کی حکومت میں شامل تھے اورجمہوریت کی خاطر مل جل کر چلنےاور ڈائیلاگ کی بات کرتے تھے، اب ان کی جانب سے الیکشن کے بعدمخلوط حکومت کا حصہ بغیر کوئی معقول وجہ بتائے نہ بننا حیران کن ہے۔