اسلام آباد: 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کیس میں چیئرمین پی ٹی آئی اور دیگر کو نیب نے ملزم نامزد کردیا جب کہ ریفرنس میں وارنٹ گرفتاری بھی منسلک کیے گئے ہیں۔ قومی احتساب بیورو (نیب)  کی ٹیم 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کیس میں چیئرمین پی ٹی آئی اور سابق وزیراعظم عمران خان کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کے لیے احتساب عدالت پہنچی۔ جہاں رجسٹرار آفس کی جانچ پڑتال کے بعد نیب کی جانب سے چیئرمین پی ٹی آئی کے خلاف 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کا ریفرنس دائر کردیا گیا۔ نیب کی جانب سے ریفرنس میں چیئرمین پی ٹی آئی کو ملزم نامزد کردیا گیا۔ عمران خان کے علاوہ  ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی، ذلفی بخاری اور شہزاد اکبر سمیت 8 ملزمان کو ریفرنس میں نامزد کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق فرح گوگی کو بھی ملزم نامزد کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ ملزمان کی فہرست میں بیرسٹر ضیا المصطفیٰ نسیم کا نام بھی شامل ہیں۔ نیب کی جانب سے دائر 190 ملین پاونڈز کرپشن ریفرنس  میں چیئرمین پی ٹی آئی اور شہزاد اکبر پر ملی بھگت کا الزام عائد کیا گیا ہے۔ ریفرنس کے مطابق شہزاد اکبر نے 2 دسمبر 2019 کو گمراہ کن نوٹ تیار کیا۔ رجسٹرار سپریم کورٹ کے اکاؤنٹ کو ریاست پاکستان کا اکاؤنٹ ظاہر کیا گیا اور چیئرمین پی ٹی آئی پورے منصوبے سے واقف تھے۔ ریفرنس میں کہا گیا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی نے شریک ملزم سے 458 کنال زمین لے رکھی تھی۔ جب زمین دی گئی القادر ٹرسٹ کا کوئی وجود نہیں تھا۔ چیئرمین پی ٹی آئی کو فائدہ دے کر شریک ملزم کو 190 میں سے 171ملین پاؤنڈ کے اکیلے بینفشری بن گئے۔ نیب نے اپنے ریفرنس میں مزید کہا کہ ریکارڈ سے ثابت ہوا شریک ملزم کی 2019 میں خریدی زمین ذلفی بخاری کو منتقل ہوئی۔ نیب نے ریفرنس میں ملزمان کا ٹرائل کرکے سزا دینے کی استدعا کی ہے۔ علاوہ ازیں نیب نے  ریفرنس کے ساتھ چیئرمین پی ٹی آئی اور مرزا شہزاد اکبر کے وارنٹ گرفتاری بھی منسلک کیے ہیں۔ علاوہ ازیں ضیا مصطفیٰ ، فرح گوگی اور ذلفی بخاری کے وارنٹ گرفتاری بھی ریفرنس کا حصہ ہیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز چیئرمین پی ٹی آئی کی جانب سے 190 ملین پاؤنڈز کرپشن کیس میں درخواست ضمانت بعد از گرفتاری دائر   کی گئی تھی۔ وکیل لطیف کھوسہ، انتظار پنجوتھہ اور علی اعجاز کے توسط سے دائر درخواست  احتساب عدالت اسلام آباد میں دائر کی گئی تھی، جس میں چیئرمین نیب اور ڈائریکٹر جنرل نیب کو فریق بنایا گیا تھا۔ چیئرمین پی ٹی آئی کی جانب سے دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ درخواست گزار سابق وزیراعظم اور معروف کرکٹر رہ چکے ہیں۔ چیئرمین پی ٹی آئی کے خلاف سیاسی بنیادوں پر ان کی شہرت کو نقصان پہنچایا جارہا ہے۔ عدالت سے استدعا ہے کہ 190 ملین پاؤنڈز اسکینڈل کیس کے فیصلے تک ضمانت بعد از گرفتاری منظور کی جائے۔